فیس بُک پر دوستی کا بھیانک انجام۔۔۔ تصویر میں نظر آنے والا لڑکا سعودی عرب سے اپنی لالچی محبوبہ سے ملنے کراچی پہنچا تو لڑکی نے کیا کَیا؟ جان کر آپ بھی کانپ اُٹھیں گے

کراچی(قدرت روزنامہ) آج کل فیس بک، وٹس ایپ سمیت نوجوان نسل سوشل میڈیا پر کافی متحرک دکھائی دیتی ہے، نوجوان جوڑے اپنا جیون ساتھی چننے کے لیے سوشل میڈیا ایپس کا بے دریغی سے استعمال کر رہے ہیں جس کے نقصانات آئے روز دیکھنے کو مل رہے ہیں، ایسا ہی ایک دلکراش واقعہ پیش آیا کراچی میں جہاں سعودی عرب سے لوٹنے والے نوجوان کو اسکی محبوبہ نے قتل کے بعد لاش کو جلا ڈالا، تفصیلات کے مطابق گوجرنوالہ کے رہاشی نوجوان کوکراچی میں محبوبہ نے قتل کے بعدلاش کوکچراکنڈی میں جلاڈالا ،

یہ واقعہ پیش آیا تھا عید الفطر کے روز لیکن کئی ماہ گزرنے کے بعد اس پر اسرار قتل سے بھی پردہ اُٹھ ہی گیا ، کراچی کے علاقے کریم آبادمیں کچراکنڈی سے عید الفطر کے روز ایک جلی ہوئی لاش ملی، نوجوان کی شناخت ہوئی علی حمزہ کے نام سے ، علی حمزہ کومحبونہ نے عید الفطر سے تین روز قبل سعودی عرب سے کراچی بلایا ،لالچی محبوبہ شبانہ نے عیدالفطر کی چاندرات کونیند کی گولیاں کھلاکرعلی حمزہ کے گلے میں پھندالگاکرقتل کیا،قتل کی لرزہ خیزواردات میں متحدہ لندن کاکارندہ اور فلاحی ادارے کابانی بھی ملوث نکلا۔ لاش کوٹھکانے لگانے کے لیے قاتل محبوبہ کوایمبولینس فراہم کی گئی ،لاش عید الفطر کے پہلے روزپھینکی گئی ، لاش ایک روز تک کچرے کے ڈھیرمیں ہی پڑی رہی ،قاتل محبوبہ کوچین نہ آیا تو ساتھی ملزم خلیل کے ہمراہ دوبارہ کچراکنڈی پہنچی ،عید کے دوسرے روز ملزمہ شبانہ نے پیٹرول پمپ سے پیٹرول خریدا اور لاش کوآگ لگائی ،ملزمہ شبانہ ساتھی ملزم خلیل کے ہمراہ واردات کے بعدفرار ہوئی، واعے کی اطلاع ملتے ہی قانون نافذ کرنے والے ادارے ہوئے متحرک اور شہر قائد میں چھاپوں کا ایک نہ رکنے والا سلسلہ شروع ہوا،

خفیہ اداروں کی اطلاع پر پتہ چلا کہ واقعے کے ذمہداران ڈیرہ اسماعیل خان میں موجود ہیں، قانون نافذ کرنے والے ادارے نےڈیرہ اسماعیل خان پہنچے، ڈیرہ اسماعیل خان میں چھاپے کے بعدتفتیشی پولیس اور قانون نافذکرنے والے اداروں کی جانب سے ملیرجعفرطیارسوسائٹی میں چھاپہ مارا گیا ، اس چھاپے میں قاتل محبوبہ شبانہ ساتھی ملزم خلیل کے ہمراہ گرفتار ہوگئی، ْقتل کی واردات سے قبل لالچی محبوبہ نے عاشق کے ساتھ سیلفیاں بھی بنوائیں، لاش کی شناخت مقتول کے ایک دانت کی مددسے ہوئی ،لالچی محبوبہ شبانہ کاآبائی تعلق ڈیراہ اسماعیل خان سے ہے،ملزمہ کاساتھ دینے والے متحدہ لندن کے کارندے خلیل کے فلاحی ادارے کے دفترمیں کھدائی بھی گئی، مجرمان نے اعتراف جرم کر لیا ہے تاہم ان سے تحقیقات کاسلسلہ جاری ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *